آئی ایم ایف قرض کیلئے راضی نہیں ہورہا، ہماری مدد کریں، پاکستان کی امریکہ سے درخواست

 

پاکستان نے آئی ایم ایف کے قرضہ پروگرام کو بحال کرنے کے لیے امریکہ سے مدد طلب کی ہے، کیونکہ حکومت کی جانب سے سخت اقدامات کے باوجود بین الاقوامی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) ابھی تک عملے کی سطح کے معاہدے پر راضی نہیں ہوا ہے۔
گزشتہ روز حکومت کی اقتصادی ٹیم نے پاکستان میں امریکی سفیر ڈونلڈ بلوم سے ملاقات کی اور اس سلسلے میں ان سے مدد مانگی۔ اقتصادی استحکام کے لیے اٹھائے جانے والے اقدامات کا اعلان کیا گیا ہے
امریکی سفیر سے ملاقات کرنے والے پاکستانی وفد میں وفاقی وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل اور وزیر مملکت برائے خزانہ عائشہ غوث پاشا شامل تھیں۔
واضح رہے کہ امریکہ آئی ایم ایف کا سب سے بڑا پارٹنر ہے اور وہ ماضی میں بھی اپنے فنڈنگ ​​پروگراموں میں پاکستان کی مدد کرتا رہا ہے۔ اس ملاقات میں پاکستانی حکام نے امریکی سفیر کو بتایا کہ حکومت مالی استحکام کے لیے اپنے جی ڈی پی کے 2.2 فیصد کے برابر اقدامات کرتی ہے۔
پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان قرضہ پروگرام کی بحالی کے لیے اب تک تین دور ہو چکے ہیں جن میں سے دو موجودہ حکومت کے پاس ہو چکے ہیں۔ اس کے علاوہ، کئی آن لائن رابطے ہوئے ہیں، لیکن ذرائع کا کہنا ہے کہ آئی ایم ایف جمعرات کی شام تک، آئی ایم ایف نے پاکستان کے ساتھ اپنی اقتصادی اور مالیاتی پالیسیوں کے حوالے سے مفاہمت کی یادداشت (ایم او یو) کا مسودہ بھی شیئر نہیں کیا تھا، جو کہ عملے کے لیے بنیاد ہے۔ سطح کے مذاکرات، جس کے بغیر آئی ایم ایف کسی معاہدے پر دستخط نہیں کرے گا۔

امیگریشن سے متعلق سوالات کے لیے ہم سے رابطہ کریں۔

کینیڈا کا امیگریشن ویزا، ورک پرمٹ، وزیٹر ویزا، بزنس، امیگریشن، سٹوڈنٹ ویزا، صوبائی نامزدگی  .پروگرام،  زوجیت ویزا  وغیرہ

نوٹ:
ہم امیگریشن کنسلٹنٹ نہیں ہیں اور نہ ہی ایجنٹ، ہم آپ کو RCIC امیگریشن کنسلٹنٹس اور امیگریشن وکلاء کی طرف سے فراہم کردہ معلومات فراہم کریں گے۔

ہمیں Urduworldcanada@gmail.com پر میل بھیجیں۔

    Jobs Hiring

    ویب سائٹ پر اشتہار کے لیے ہم سے رابطہ کریں۔

    اشتہارات اور خبروں کیلئے اردو ورلڈ کینیڈا سے رابطہ کریں     923455060897+  یا اس ایڈریس پرمیل کریں
     urduworldcanada@gmail.com

    رازداری کی پالیسی

    اردو ورلڈ کینیڈا کے تمام جملہ حقوق محفوظ ہیں۔ ︳    2024 @ urduworld.ca