مہنگا پٹرول، گاڑی، موٹر سائیکل میں پٹرول کی بچت کیسے کی جائے؟؟

دنیا بھر کے ساتھ ساتھ پاکستان میں بھی پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں آسمان چھو رہی ہیں اور اس وقت ریکارڈ سطح پر ہیں۔ حکومت پاکستان نے بدھ کی شب پٹرول پھر مہنگا کردیا
پاکستان میں پیٹرول کی قیمت اب تقریباً 24 روپے اضافے سے 233 روپے فی لیٹر ہو گئی ہے۔

ایک ایسے وقت میں جب مہنگائی بڑھ رہی ہے اور عام آدمی کی قوت خرید میں مسلسل کمی آ رہی ہے، یہ جاننا ضروری ہے کہ موجودہ وسائل میں پٹرول کی کھپت کو کیسے کم کیا جائے۔ خاص طور پر ان لوگوں کے لیے جنہیں گاڑی موٹر سائیکلکے سفر کی ضرورت ہے۔

اہم سوال یہ ہے کہ ان میں سے کون سے طریقے کام کرتے ہیں اور کون سے طریقے خالصتاً فرضی ہیں۔

کیا 90 کی سپیڈ سے گا ڑی چلانے سے ایندھن کی بچت ہوتی ہے؟

بہت سے ڈرائیوروں کا خیال ہے کہ اگر گاڑی 90 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے چلائی جائے تو کم ایندھن استعمال ہوتا ہے لیکن RAC آٹوموٹیو گروپ کے مطابق گاڑی کی ایک بھی مستقل رفتار نہیں ہے جسے ایندھن کی معیشت کے لحاظ سے اہم قرار دیا جا سکے۔

ان کا کہنا ہے کہ 90 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار کا افسانہ پرانے ٹیسٹوں سے شروع ہوا جس میں ایندھن کی کھپت کا اندازہ لگایا جاتا تھا اور وہ 90 کلومیٹر فی گھنٹہ اور 120 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے کیے جاتے تھے۔

اس وقت 90 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے چلنے والی کار نے بہترین اوسط ایندھن دیا جس کے بعد یہ خیال عام ہوا کہ یہ رفتار ہونی چاہیے۔

RAC گروپ کے مطابق، ہر گاڑی مختلف ہوتی ہے اور اس کے حجم کے لحاظ سے، 70-80 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار عام طور پر بہترین ایندھن کی اوسط دیتی ہے۔

اگر آپ نے کبھی بھی گرم موسم میں اپنی گاڑی کا ایئر کنڈیشنر پٹرول بچانے کے لیے استعمال نہیں کیا، تو آپ نے صحیح فیصلہ کیا ہے۔

کار کے ایئر کنڈیشنر کو چلانے کے لیے اضافی توانائی کی ضرورت ہوتی ہے اور اسے چلانے کے بعد گاڑی کا انجن تقریباً دس فیصد زیادہ ایندھن استعمال کرنا شروع کر دیتا ہے۔

اہم بات یہ ہے کہ ایئر کنڈیشنر کا استعمال نسبتاً کم فاصلے پر سفر کرنے سے کافی مقدار میں پٹرول بچاتا ہے۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ ایئر کنڈیشنر کو شروع میں زیادہ توانائی کی ضرورت ہوتی ہے کیونکہ گاڑی کے اندرونی درجہ حرارت کو کم کرنا پڑتا ہے۔

ایسے معاملات میں ونڈشیلڈ کو نیچے کرنا ایک بہتر حکمت عملی ہو سکتی ہے لیکن اس سے ایک اور مسئلہ پیدا ہوتا ہے جسے ‘کریپنگ’ کہا جاتا ہے۔ یہ وہ عمل ہے جس کے ذریعے گاڑی کا انجن کھلے شیشے سے آنے والے ہوا کے دباؤ کی وجہ سے زیادہ محنت کرنے لگتا ہے۔

 

 

 

ایسے میں فیصلہ گاڑی کی رفتار کو مدنظر رکھتے ہوئے کیا جانا چاہیے کیونکہ آپ جتنی تیزی سے گاڑی چلاتے ہیں ہوا کا دباؤ اتنا ہی زیادہ ہوتا ہے۔

 

جب گاڑی نیوٹرل گیئر میں چل رہی ہوتی ہے یا کلچ کو دبایا جاتا ہے تو اس عمل کو ‘کاسٹنگ’ کہا جاتا ہے۔

اے اے آٹوموبائل ایسوسی ایشن کے مطابق یہ طریقہ بالکل موزوں نہیں ہے۔ اس کی ایک وجہ یہ ہے کہ یہ غیر محفوظ ہے کیونکہ اگر کوئی نازک صورتحال پیدا ہو جائے تو آپ گاڑی کی رفتار اچانک نہیں بڑھا پائیں گے لیکن دوسری اہم وجہ یہ ہے کہ اس سے ایندھن کی بچت نہیں ہوتی۔

AA آٹوموبائل ایسوسی ایشن کے مطابق، زیادہ تر گاڑیوں میں الیکٹرک کنٹرول ہوتا ہے جو گاڑی کے ایکسلریٹر سے پاؤں ہٹانے پر ایندھن کی سپلائی بند کر دیتا ہے۔ اس لیے لاگت کا کوئی فائدہ نہیں۔
کروز کنٹرول

کروز کنٹرول بعض گاڑیوں کی ایک خصوصیت ہے، جو ایکسلریٹر کو دبائے بغیر گاڑی کو مستقل رفتار سے چلانے میں مدد کرتا ہے۔

ایندھن کو بچانے کا یہ ایک بہترین طریقہ ہے کیونکہ یہ غیر ضروری رفتار اور اچانک ٹوٹنے کے امکان کو کم کرتا ہے۔

لیکن یہ تب ہی مفید ہے جب آپ ہموار شاہراہ پر سفر کر رہے ہوں کیونکہ اگر آپ پہاڑی علاقے میں سفر کر رہے ہیں تو کروز کنٹرول کو چڑھنے کے لیے ایڈجسٹ ہونے کے لیے زیادہ وقت اور ایندھن کی ضرورت ہوگی۔

عام طور پر جب بھی کوئی گاڑی پہاڑی سڑک پر نیچے کی طرف سفر کرتی ہے تو ہم ایکسلریٹر سے پاؤں ہٹا دیتے ہیں لیکن کروز کنٹرول کو یہ معلوم نہیں ہوتا کہ آگے کیا ہے، اس لیے اس میں زیادہ وقت لگتا ہے اور گاڑی میں ایندھن بھی خرچ ہوتا ہے۔ زیادہ ہے

ٹائر پریشر

گاڑی کے ٹائر پریشر کا ایندھن کی کھپت سے تعلق
اگر آپ کی گاڑی کے ٹائر کم ایئر ہیں تو وہ زیادہ پیٹرول استعمال کرے گی۔ اسی لیے ہم آپ کو مشورہ دیتے ہیں کہ اپنی گاڑی کے ٹائر کی ہوا کو باقاعدگی سے چیک کریں، خاص طور پر طویل سفر پر جانے سے پہلے۔

آپ کی گاڑی کے ٹائروں کے لیے ہوا کا بہترین دباؤ کیا ہے؟ یہ معلوم کرنے کے لیے آپ کو اپنی گاڑی کے ساتھ آنے والے کتابچے کو چیک کرنا چاہیے، لیکن اگر آپ کی گاڑی میں بہت زیادہ سامان اور مسافر موجود ہیں، تو اس کے مطابق دباؤ بڑھائیں۔

لیکن خیال رہے کہ گاڑی جتنی بھاری ہوگی، اتنا ہی زیادہ ایندھن استعمال ہوگا۔

 

امیگریشن سے متعلق سوالات کے لیے ہم سے رابطہ کریں۔

کینیڈا کا امیگریشن ویزا، ورک پرمٹ، وزیٹر ویزا، بزنس، امیگریشن، سٹوڈنٹ ویزا، صوبائی نامزدگی  .پروگرام،  زوجیت ویزا  وغیرہ

نوٹ:
ہم امیگریشن کنسلٹنٹ نہیں ہیں اور نہ ہی ایجنٹ، ہم آپ کو RCIC امیگریشن کنسلٹنٹس اور امیگریشن وکلاء کی طرف سے فراہم کردہ معلومات فراہم کریں گے۔

ہمیں Urduworldcanada@gmail.com پر میل بھیجیں۔

    Jobs Hiring

    ویب سائٹ پر اشتہار کے لیے ہم سے رابطہ کریں۔

    اشتہارات اور خبروں کیلئے اردو ورلڈ کینیڈا سے رابطہ کریں    9946622  (825)  1+   یا اس ایڈریس پرمیل کریں
     urduworldcanada@gmail.com

    رازداری کی پالیسی

    اردو ورلڈ کینیڈا کے تمام جملہ حقوق محفوظ ہیں۔ ︳    2023 @ urduworld.ca