فون کال کیسے ٹیپ کی جاتی ہے؟ اس کو روکنے کا طریقہ کیا ہے؟

اردو ورلڈ کینیڈا ( ویب نیوز )فون کال کیسے ٹیپ کی جاتی ہے؟ اس کو روکنے کا طریقہ کیا ہے؟ آڈیو اور ویڈیو لیکس کا پاکستان کی سیاست میں ہمیشہ ہی شور رہا ہے لیکن حالیہ دنوں میں عمران خان کی اہلیہ کی مبینہ آڈیو لیکس نے ایک بار پھر پاکستانی سیاست میں ہلچل مچا دی ہے۔
پی ٹی آئی نے دعویٰ کیا ہے کہ عمران خان کی محفوظ لائن کو غیر قانونی طور پر ٹیپ کیا گیا۔

عمران خان کی اہلیہ کی آڈیو چند دن قبل لیک ہوئی تھی

عمران خان کی اہلیہ کی آڈیو چند دن قبل لیک ہوئی تھی

فلموں میں ہم نے اکثر لوگوں کو گھر یا عمارت کے باہر وین میں بیٹھے اپنے آلات کی مدد سے گفتگو سنتے دیکھا۔ لیکن اب دوسروں کی گفتگو سننے کے اور بھی بہت سے جدید طریقے ہیں۔

پاکستان کی سیاست میں مبینہ وائر ٹیپنگ، فون ٹیپنگ اور آڈیو لیکس ایک بار پھر زیر بحث ہیں۔

پی ٹی آئی رہنمائوں کی گزشتہ روز پریس کانفرنس پر رد عمل دیتے ہوئے وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب نے کہا، "پی ٹی آئی کے ترجمان نے تسلیم کیا ہے کہ غداری کے رجحانات اور اداروں کے خلاف مہم سابق خاتون اول نے چلائی تھی جنکی آڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہورہی ہے
ایک ٹی وی اینکر کی جانب سے یہ پوچھے جانے پر کہ کیا پی ٹی آئی کو نیوٹرلز کی تنقید کے بعد اس کے رہنماؤں کی آڈیو ریکارڈنگ نشر کی جا رہی ہے تو پی ٹی آئی رہنمائوں نے جواب دیا، "ہم نے کبھی سیاسی مفاد میں ایسا نہیں کیا

مریم اورنگزیب نے کہا کہ عمران خان ماضی میں کہتے تھے کہ وزیراعظم کی فون ریکارڈنگ بالکل درست ہوتی ہے۔ انہوں نے اس کی مکمل حمایت کی تھی

سوال یہ پیدا ہوتا ہے ہے کہ جدید دور میں فون ٹیپنگ کیسے کی جاتی ہے اور کیا اسے پکڑنے کا کوئی طریقہ ہے؟

فون کیسے ٹیپ کیا جاتا ہے؟
سادہ لفظوں میں فون ٹیپنگ کا مطلب ہے بغیر اجازت کے کسی کے فون سے معلومات سننا اور ریکارڈ کرنا اور وصول کرنا۔

فون ٹیپنگ

فون ٹیپنگ

انفارمیشن سیکیورٹی اور ٹیلی کام کے شعبے سے وابستہ افراد کا کہنا ہے کہ قانون نافذ کرنے والے اداروں کے پاس ایسا نظام موجود ہے جو شک کی بنیاد پر کسی بھی کال کو ٹیپ کرسکتا ہے جب کہ ایسی ٹیکنالوجی عام لوگوں کے ہاتھ میں بھی لگ سکتی ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ قانون نافذ کرنے والے ادارے لینڈ لائنز اور پی ٹی سی ایل جیسے ایکسچینجز پر اپنے آلات انسٹال کرتے ہیں اور موبائل نیٹ ورکس پر تبادلہ کرتے وقت کسی بھی کال کو ریکارڈ کرنے یا ٹیپ کرنے کی مکمل رسائی رکھتے ہیں۔

اس کی وضاحت کے لیے وہ بتاتے ہیں کہ فون کال کے دوران نیٹ ورک کے ذریعے ڈیٹا گیٹ وے تک پہنچایا جاتا ہے لیکن اس دوران ایجنسیاں سیکیورٹی وجوہات کی بنا پر کسی بھی کال کو ٹیپ کرسکتی ہیں

تاہم ان کا کہنا ہے کہ نیٹ ورک فراہم کرنے والے یہ نہیں جانتے کہ کس کو ٹیپ کیا جا رہا ہے اور کس کی کال ریکارڈ کی جا رہی ہے۔

آئی ٹی اور ٹیلی کام کے شعبوں کے ماہرین کا کہنا ہے کہ کسی کے لینڈ لائن نیٹ ورک کو ٹیپ کرنا آسان ہے کیونکہ اس کے ساتھ چھیڑ چھاڑ کی جا سکتی ہے۔ "پی ٹی سی ایل یا کسی اور لینڈ لائن کے معاملے میں، جہاں ڈسٹری بیوشن باکس کے ذریعے کیبل گھر پہنچ رہی ہے، کوئی بھی آپ کے نمبر سے کال کر سکتا ہے اور سن سکتا ہے۔”

فون ٹیپ کرنا

اگر کوئی فون کیبل پر ہک لگاتا ہے یا بارش کی وجہ سے لائن جڑ جاتی ہے تو ایک کال کے دوران دوسری کالوں کی آوازیں بھی سنائی دیتی ہیں۔

سائبرسیکیوریٹی ماہرین کا کہنا ہے کہ ہر ٹیلی کام سینٹر میں کچھ ڈیوائسز ہوتی ہیں جو خاص طور پر ‘Laffle Interception’ کے لیے بنائی گئی ہیں۔ ‘اگر کسی کی کال کو ٹیپ کرنے کی ضرورت ہو تو وہ نمبرز ان ڈیوائسز میں ڈالے جاتے ہیں اور جیسے ہی وہ شخص کال وصول کرتا ہے، اس کی کال کی ریکارڈنگ سنی جا سکتی ہے۔

کیا یہ بتانے کا کوئی طریقہ ہے کہ آیا آپ کا فون ٹیپ ہو رہا ہے؟

"قانونی طور پر صرف آئی بی کو سول ایکسچینجز کی نگرانی کا اختیار حاصل ہے اور کسی دوسرے ادارے کو ایسا کرنے کا حق نہیں ہے، اور یہ صرف وزیر اعظم کی اجازت سے ہی ممکن ہے، اور یہی قانون ہے۔”

 

فون ٹیپنگ s

فون ٹیپنگ s

ان کے بقول بعض اوقات معاملات بہت تیزی سے ہوتے ہیں اور بعض اوقات صورتحال ایسی ہوتی ہے کہ آئی بی کے ڈائریکٹر جنرل روزمرہ کے معاملات کا فیصلہ خود کرتے ہیں لیکن اس کی تصدیق وزیراعظم کرتے ہیں۔

انفارمیشن سیکیورٹی ماہرین کا کہنا ہے کہ اگر آپ یہ دیکھنا چاہتے ہیں کہ آپ کی کال ٹیپ ہو رہی ہے یا نہیں، تو یہ دیکھا جا سکتا ہے کہ اس میں کوئی تحریف یا مخصوص شور تو نہیں ہے یا پھر آپ کو اپنی آواز کو دہرانا پڑے گا تو نہیں، اسے سنا نہیں جا سکتا۔
انہوں نے کہا کہ ٹیلی کام سیکٹر کو مسلسل فون ٹیپنگ کی شکایات موصول ہوئی ہیں جس میں کہا گیا ہے کہ وہ پہلے اپنی لائن کی ‘تصدیق کریں، یعنی چیک کریں کہ آپ کے تار کسی جگہ سے متاثر تو نہیں ہوئے۔ ۔ اس صورت میں، ٹیلی کام حکام اسے ٹھیک کرتے ہیں اور گھر کے اندر اور باہر تاروں کو محفوظ بناتے ہیں۔

ماہرین کہنا ہے کہ ٹیلی کام سروس فراہم کرنے والوں کے پاس یہ دیکھنے کا کوئی خاص طریقہ نہیں ہے کہ آیا کسی کا فون ٹیپ ہو رہا ہے، لیکن اس کا حل یہ ہے کہ "آپ ایف آئی اے کے سائبر کرائم ونگ میں شکایت درج کر سکتے ہیں۔” کہ میں کال کے دوران مشتبہ شور سنتا ہوں اور مجھے شک ہے کہ میری کال ٹیپ کی جا رہی ہے۔
اس شعبے کے ماہرین نے صارفین کو مشورہ دیا ہے کہ وہ اپنے موبائل فون میں کوئی بھی غیر ضروری ایپ نہ رکھیں جس سے فون ٹیپنگ کا خطرہ بڑھ سکتا ہے۔ "کسی بھی ایپلیکیشن کے لیے جتنی اجازتیں چاہیں دیں، مثال کے طور پر، اگر کیلکولیٹر ایپ آپ سے کیمرہ اور مائیکروفون کی ایسس مانگے تو نہ دیں کیونکہ اس میں اس کا کوئی کام نہیں

صارفین سمارٹ فونز پر فون ٹیپنگ سے بچنے کے لیے سگنلز جیسے محفوظ میسجنگ ایپس کا استعمال کر سکتے ہیں۔ اگر آپ کا نیٹ ورک فون استعمال کرتے ہوئے اچانک 3G سے 2G میں بدل جاتا ہے تو یہ بھی ریڈ سگنل ہے

واٹس ایپ کالز انکرپٹڈ ہوتی ہیں، یعنی وہ الگورتھم سے گزرتی ہیں اور ان کے درمیان آواز کوئی نہیں سن سکتا، لیکن لینڈ لائن کالز میں انکرپشن نہیں ہوتا ہے۔

سے بچنے کے لیے ماہرین کا کہنا ہے کہ ایپس کو صرف پلے اسٹور یا ایپل اسٹور سے منظور شدہ ہونا چاہیے۔ عوامی وائی فائی یا ہاٹ سپاٹ پر کبھی بھی انٹرنیٹ استعمال نہ کریں اور نہ ہی کال کریں۔ ہوائی اڈوں پر کافی شاپس، میٹرو اور پبلک ہاٹ سپاٹ پر سائبر حملے ہو سکتے ہیں۔

امیگریشن سے متعلق سوالات کے لیے ہم سے رابطہ کریں۔

کینیڈا کا امیگریشن ویزا، ورک پرمٹ، وزیٹر ویزا، بزنس، امیگریشن، سٹوڈنٹ ویزا، صوبائی نامزدگی  .پروگرام،  زوجیت ویزا  وغیرہ

نوٹ:
ہم امیگریشن کنسلٹنٹ نہیں ہیں اور نہ ہی ایجنٹ، ہم آپ کو RCIC امیگریشن کنسلٹنٹس اور امیگریشن وکلاء کی طرف سے فراہم کردہ معلومات فراہم کریں گے۔

ہمیں Urduworldcanada@gmail.com پر میل بھیجیں۔

    Jobs Hiring

    ویب سائٹ پر اشتہار کے لیے ہم سے رابطہ کریں۔

    اشتہارات اور خبروں کیلئے اردو ورلڈ کینیڈا سے رابطہ کریں     923455060897+  یا اس ایڈریس پرمیل کریں
     urduworldcanada@gmail.com

    رازداری کی پالیسی

    اردو ورلڈ کینیڈا کے تمام جملہ حقوق محفوظ ہیں۔ ︳    2024 @ urduworld.ca