عید قربان کے حوالے سے تاجر اور خریدار کیوں پریشان ہیں؟

اردو ورلڈ کینیڈا ( ویب نیوز )عید الاضحی کے حوالے سے تاجر اور خریدار کیوں پریشان ہیں؟ لمپی سکن وائرس نے اس بار عید کی خوشیاں برباد کر دی ہیں۔ لمپی وائرس کی وجہ سے سینکڑوں جانور مر چکے ہیں باقی بھی بیمار پڑ گئے۔
کسان اور بیوپاری جو سارا سال عید الاضحی کا انتظار کرتے تھے اس سال دونوں ہی پریشان ہیں۔
پاکستان کے مختلف صوبوں میں بڑی تعداد میں بڑے جانور جن میں گائے، بیل بکرے شامل ہیں لمپی وائرس سے متاثر ہیں۔

صوبہ سندھ سے شروع ہونے والی یہ بیماری ملک کے دیگر حصوں میں پھیل چکی ہے جس سے مویشیوں کے لیے بڑا خطرہ ہے اس بیماری سے اب تک ہزاروں جانور مر چکے ہیں جبکہ لاکھوں متاثر ہوئے ہیں۔
جب کہ پاکستان کے بہت سے علاقوں سے لوگ دنوں کا سفر کر کے منڈی پہنچتے ہیں تو انہیں پتہ چلتا ہے کہ ان کے جانور میں وائرس ہو گیا ہے۔ اس سال جانور بیوپاریوں کو فائدہ پہنچانے کے بجائے نقصان پہنچا رہے ہیں۔
زیادہ تر تاجر یہ نہیں جانتے کہ ان کے جانور کو یہ بیماری کیسے لگی لیکن وہ اس بیماری کے بارے میں جانتے ضروری ہیں۔ بیوپاریوں کا کہنا ہے کہ وہ جو بھی جانور خریدتے ہیں وہ ٹھیک ہو جاتے ہیں لیکن بیماری کا کسی کو علم نہیں کہ کب ہوجائے

پاکستان میں مہنگا پیٹرول جانوروں کی پرورش کے اخراجات میں نمایاں اضافہ کا باعث بنا ہے۔

لمپی وائرس سے متاثرہ جانوروں کی آسانی سے شناخت کی جا سکتی ہے۔ متاثرہ جانور کو تیز بخار ہوتا ہے، وہ کھانا پینا بند کر دیتا ہے، جانور اداس ہو جاتا ہے اور اپنی نقل و حرکت کھو دیتا ہے اور اس کی جلد پر بڑے دانے بھی نکل آتے ہیں جو تقریبا 4 سینٹی میٹر ہوتے ہیں

وائرس سے متاثرہ جانور کو صحت یاب ہونے میں تقریبا دو ہفتے لگتے ہیں۔ لیکن اگر جانور اس بیماری سے بہت بیمار ہو جائے یعنی اس کے جسم پر دانے پھٹ جائیں تو جانور مر جاتا ہے۔ اس لیے جس جانور کی بیماری کا پتہ چل جائے تو اسے فورا دوسرے جانوروں سے الگ کر کے ڈاکٹر سے رجوع کریں۔

یہ بیماری کیسے پھیلتی ہے اور پاکستان میں اب تک کیا صورتحال ہے؟
جانوروں کے ڈاکٹروں کے مطابق یہ بیماری ایک جانور سے دوسرے جانور میں آسانی سے منتقل ہوتی ہے۔ کیونکہ جب کوئی جانور وائرس سے متاثر ہوتا ہے تب جب مچھر یا مکھی کسی بیمار جانور کے زخم پر اڑتی ہے، تو یہ وائرس اپنے ساتھ دوسرے جانوروں تک لے جاتی ہے۔ وہاں وائرس کو منتقل کرتی ہے اس لیے ضروری ہے کہ جانور اور اس کے قریب سپرے کیا جائے۔

 

امیگریشن سے متعلق سوالات کے لیے ہم سے رابطہ کریں۔

کینیڈا کا امیگریشن ویزا، ورک پرمٹ، وزیٹر ویزا، بزنس، امیگریشن، سٹوڈنٹ ویزا، صوبائی نامزدگی  .پروگرام،  زوجیت ویزا  وغیرہ

نوٹ:
ہم امیگریشن کنسلٹنٹ نہیں ہیں اور نہ ہی ایجنٹ، ہم آپ کو RCIC امیگریشن کنسلٹنٹس اور امیگریشن وکلاء کی طرف سے فراہم کردہ معلومات فراہم کریں گے۔

ہمیں Urduworldcanada@gmail.com پر میل بھیجیں۔

    Jobs Hiring

    ویب سائٹ پر اشتہار کے لیے ہم سے رابطہ کریں۔

    اشتہارات اور خبروں کیلئے اردو ورلڈ کینیڈا سے رابطہ کریں    9946622  (825)  1+   یا اس ایڈریس پرمیل کریں
     urduworldcanada@gmail.com

    رازداری کی پالیسی

    اردو ورلڈ کینیڈا کے تمام جملہ حقوق محفوظ ہیں۔ ︳    2023 @ urduworld.ca