ضمنی الیکشن، تحریک انصاف نے ن لیگ سے پنجاب چھین لیا، 15 سیٹوں پر فاتح

اردو ورلڈ کینیڈا ( ویب ڈیسک) ضمنی الیکشن میں سابق وزیراعظم عمران خان کا بیانیہ جیت گیا، غیر حتمی اور غیر سرکاری نتائج کے مطابق 20 میں سے 15 نشستوں پر پی ٹی آئی نے کامیابی حاصل کی، مسلم لیگ ن نے 3 اور ایک آزاد امیدوار نے کامیابی حاصل کی۔

ان 20 نشستوں میں سے لاہور کی 4، راولپنڈی کی 1، خوشاب میں 1، بھکر میں 1، فیصل آباد میں 1، جھنگ میں 2، شیخوپورہ میں 1، ساہیوال میں 1، ملتان میں 1، لودھراں میں 2، بہاولنگر میں 1، 1 لیہ میں ایک اور ڈیرہ غازی خان کی ایک سیٹ شامل ہے۔

غیر حتمی اور غیر سرکاری نتائج

پی پی 7 راولپنڈی:

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے کرنل (ر) شبیر اعوان 62139 ووٹ لے کر آگے ہیں جبکہ پاکستان مسلم لیگ (ن) کے راجہ صغیر احمد 58167 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر ہیں۔

2018 کے عام انتخابات میں راجہ صغیر احمد آزاد امیدوار کے طور پر کامیاب ہوئے اور بعد میں تحریک انصاف میں شامل ہو گئے۔ انہوں نے مسلم لیگ ن اور پی ٹی آئی کے راجہ محمد علی اور غلام مرتضیٰ ستی کو شکست دی۔

صفحہ 83 خوشاب:

نامکمل اور غیر سرکاری نتائج کے مطابق پی پی 83 خوشاب میں پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے امیدوار حسن اسلم کامیاب ہوگئے، انہوں نے 48475 ووٹ حاصل کیے۔ آزاد امیدوار اسلم 41752 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

2018 کے عام انتخابات میں آزاد امیدوار ملک غلام رسول سنگھا کامیاب ہو کر پاکستان تحریک انصاف میں شامل ہو گئے تھے

پی پی 90 بھکر:

غیر حتمی اور غیر سرکاری نتائج کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کے عرفان اللہ نیازی 68982 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے جب کہ مسلم لیگ ن کے امیدوار سعید اکبر نوانی 59856 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر ہیں۔

2018 کے عام انتخابات میں آزاد امیدوار سعید اکبر خان نے جیت کر پی ٹی آئی میں شمولیت اختیار کی، انہوں نے مسلم لیگ ن کے عرفان اللہ خان نیازی اور پی ٹی آئی کے احسان اللہ کو شکست دی تھی

پی پی 97 فیصل آباد:

غیر حتمی اور غیر سرکاری نتائج کے مطابق پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے امیدوار علی افضل ساہی 66 ہزار 672 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے جبکہ مسلم لیگ ن کے محمد اجمل چیمہ 54 ہزار 77 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر ہیں۔

2018 کے عام انتخابات میں انہی امیدواروں کے درمیان سخت مقابلہ ہوا، اجمل چیمہ آزاد امیدوار کی حیثیت سے کامیاب ہوئے اور پی ٹی آئی میں شمولیت اختیار کی۔

 

پی پی 125، 127 جھنگ

نامکمل اور غیر سرکاری نتائج کے مطابق پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے اعظم چیلہ 82 ہزار 382 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے جبکہ پاکستان مسلم لیگ نواز کے امیدوار فیصل حیات جبوانہ 52 ہزار 128 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

پی پی 127 میں غیر حتمی اور غیر سرکاری نتائج کے مطابق پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے امیدوار مہر نواز بھروانہ 69 ہزار 986 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے جبکہ مسلم لیگ (ن) کے امیدوار مہر اسلم بھروانہ نے 46 ہزار 825 ووٹ حاصل کیے۔

2018 کے عام انتخابات میں پی پی 125 سے آزاد امیدوار فیصل حیات جبوانہ نے کامیابی حاصل کی اور میاں اعظم چیلہ کو شکست دی جبکہ پی پی 127 سے آزاد امیدوار مہر محمد اسلم بھروانہ نے مہر محمد نواز بھروانہ کو شکست دی۔

پی پی 140 شیخوپورہ:

غیر حتمی اور غیر سرکاری نتائج کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کے امیدوار خرم شہزاد ورک 49 ہزار 734 ووٹ لے کر پہلے نمبر پر رہے جبکہ مسلم لیگ ن کے امیدوار میاں خالد محمود 32 ہزار 812 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

2018 کے عام انتخابات میں پاکستان تحریک انصاف کے امیدوار میاں خالد محمود نے مسلم لیگ ن کے امیدوار یاسر اقبال کو شکست دی تھی۔

پی پی 158 لاہور

پی پی 158 سے پاکستان تحریک انصاف کے اکرم عثمان 37463 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے، مسلم لیگ ن کے امیدوار رانا احسن شرافت 13906 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

پی پی 167 لاہور

غیر حتمی اور غیر سرکاری نتائج کے مطابق پی پی 167 سے پاکستان تحریک انصاف کے امیدوار چوہدری شبیر گجر کامیاب ہوئے، انہوں نے 40 ہزار 206 ووٹ حاصل کیے جب کہ مسلم لیگ ن کے امیدوار نذیر چوہان نے 26 ہزار 535 ووٹ حاصل کیے۔

پی پی 168 لاہور

غیر حتمی اور غیر سرکاری نتائج کے مطابق پی پی 168 میں مسلم لیگ (ن) کے امیدوار ملک اسد کھوکھر 25 ہزار 685 ووٹ لے کر پہلے جبکہ پاکستان تحریک انصاف کے امیدوار 15 ہزار 81 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

 

 

 

پی پی 170 لاہور

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے امیدوار ظہیر عباس کھوکھر 23 ہزار 969 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے جبکہ مسلم لیگ (ن) کے امیدوار محمد امین ذوالقرنین نے 14 ہزار 916 ووٹ حاصل کیے۔

2018 میں صوبائی دارالحکومت لاہور کے چار حلقوں میں مسلم لیگ (ن) کے امیدواروں کا مقابلہ پاکستان تحریک انصاف کے امیدواروں کے ساتھ ہوا تھا۔ پی ٹی آئی نے چاروں حلقوں میں کامیابی حاصل کی تھی تاہم حمزہ شہباز کو ووٹ دینے کی وجہ سے تمام امیدوار ڈی سیٹ ہو گئے ہیں۔

 

پی پی 202 چیچہ وطنی

پاکستان تحریک انصاف کے امیدوار میجر (ر) غلام سرور 61 ہزار 989 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے جب کہ پاکستان مسلم لیگ (ن) کے امیدوار نعمان لنگڑیال نے 59 ہزار 167 ووٹ حاصل کیے۔

2018 کے عام انتخابات میں پاکستان تحریک انصاف کے امیدوار ملک نعمان لنگڑیال نے مسلم لیگ ن کے شاہد منیر کو 13 ہزار ووٹوں سے شکست دی تھی۔

پی پی 217 ملتان

غیر حتمی اور غیر سرکاری نتائج کے مطابق پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے امیدوار مخدوم زین قریشی 122 پولنگ اسٹیشنز پر 46 ہزار 427 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے۔ پاکستان مسلم لیگ ن کے امیدوار محمد سلمان نعیم 40 ہزار 285 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

واضح رہے کہ فاتح امیدوار زین قریشی سابق وفاقی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کے صاحبزادے ہیں۔

پی پی 224، 228 لودھراں:

پی پی 228 لودھراں سے آزاد امیدوار رفیع الدین بخاری کامیاب ہوئے، انہوں نے 42719 ووٹ حاصل کیے۔ پی ٹی آئی کے کیپٹن (ر) عزت جاوید 34 ہزار 635 ووٹ لے کر دوسرے جبکہ مسلم لیگ ن کے نذیر احمد بلوچ 30 ہزار 841 ووٹ لے کر تیسرے نمبر پر رہے۔

پی پی 224 لودھراں سے پاکستان تحریک انصاف کے امیدوار عامر اقبال شاہ 69 ہزار 265 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے جبکہ مسلم لیگ ن کے امیدوار زوار حسین وڑائچ 55 ہزار 748 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

2018 کے عام انتخابات میں زوار حسین وڑائچ نے مسلم لیگ ن کے رہنما محمد عامر اقبال شاہ کو اور نذیر احمد خان نے مسلم لیگ ن کے سید محمد رفیع الدین بخاری کو شکست دی تھی۔

 

 

 

پی پی 237 بہاولنگر:

نامکمل اور غیر سرکاری نتائج کے مطابق پاکستان مسلم لیگ ن کے امیدوار فدا حسین وٹو نے 61248 ووٹ حاصل کرکے کامیابی کو گلے لگا لیا، پاکستان تحریک انصاف کے امیدوار سید آفتاب رضا نے 25227 ووٹ حاصل کیے۔

2018 کے عام انتخابات میں آزاد امیدوار فدا حسین نے پاکستان تحریک انصاف کے محمد طارق عثمان کو شکست دی اور بعد ازاں جہانگیر ترین خان کے ذریعے پی ٹی آئی میں شمولیت اختیار کی۔

پی پی 272، 273 مظفر گڑھ:

پی پی 272 میں پاکستان تحریک انصاف کے معظم جتوئی 49 ہزار 823 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے جبکہ زہرہ باسط بخاری 42 ہزار 995 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہیں۔

پی پی 273 میں غیر حتمی اور غیر سرکاری نتائج کے مطابق پاکستان مسلم لیگ ن کے امیدوار محمد سبطین رضا 52 ہزار 631 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے جب کہ پاکستان تحریک انصاف کے یاسر عرفات جتوئی 46 ہزار 903 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

ضمنی الیکشن 2018 کے دوران زہرہ بتول نے کامیابی حاصل کی، انہوں نے آزاد امیدوار سید ہارون احمد بخاری کو شکست دی، جب کہ پی پی 273 میں پاکستان تحریک انصاف کے سبطین رضا بخاری نے آزاد امیدوار رسول بخش کو شکست دی تھی

پی پی 282 لیہ:

پاکستان تحریک انصاف کے قیصر عباس مگسی 43922 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے جبکہ لالہ طاہر رندھاوا 29715 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر ہیں۔

2018 کے الیکشن میں آزاد امیدوار لالہ طاہر رندھاوا نے پی ٹی آئی کے قیصر عباس خان کو شکست دے کر کامیابی حاصل کی۔

پی پی 288 ڈی جی خان:

پاکستان تحریک انصاف کے امیدوار سیف الدین کھوسہ 56 ہزار 857 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے جبکہ مسلم لیگ ن کے امیدوار عبدالقادر کھوسہ نے 33 ہزار 254 ووٹ حاصل کیے۔

2018 کے عام انتخابات میں محسن عطا خان کھوسہ اس حلقے سے آزاد امیدوار کے طور پر کامیاب ہوئے اور پی ٹی آئی میں شمولیت اختیار کی۔

 

لڑائی جھگڑے

پنجاب میں ضمنی انتخابات کے دوران لڑائی جھگڑے کے واقعات پیش آئے، مخالفین نے ایک دوسرے پر لاٹھی چارج کیا، پولیس کو منتشر کرنے کے لیے ہوا میں فائرنگ کرنا پڑی۔

پنجاب میں ضمنی انتخابات کے دوران کہیں لڑائی اور جھگڑے ہوئے، کسی کا سر پھٹ گیا تو کوئی شکایت کرتا نظر آیا۔ لاہور کے پی پی 168 اعوان مارکیٹ کے پولنگ سٹیشن 50 اور 51 میں بے ضابطگیاں دیکھنے میں آئیں۔ پاکستان تحریک انصاف اور مسلم لیگ ن کے ووٹرز آمنے سامنے آگئے۔ نعرے لگائے گئے، ایک دوسرے پر الزامات بھی لگائے گئے۔

امیگریشن سے متعلق سوالات کے لیے ہم سے رابطہ کریں۔

کینیڈا کا امیگریشن ویزا، ورک پرمٹ، وزیٹر ویزا، بزنس، امیگریشن، سٹوڈنٹ ویزا، صوبائی نامزدگی  .پروگرام،  زوجیت ویزا  وغیرہ

نوٹ:
ہم امیگریشن کنسلٹنٹ نہیں ہیں اور نہ ہی ایجنٹ، ہم آپ کو RCIC امیگریشن کنسلٹنٹس اور امیگریشن وکلاء کی طرف سے فراہم کردہ معلومات فراہم کریں گے۔

ہمیں Urduworldcanada@gmail.com پر میل بھیجیں۔

    Jobs Hiring

    ویب سائٹ پر اشتہار کے لیے ہم سے رابطہ کریں۔

    اشتہارات اور خبروں کیلئے اردو ورلڈ کینیڈا سے رابطہ کریں    9946622  (825)  1+   یا اس ایڈریس پرمیل کریں
     urduworldcanada@gmail.com

    رازداری کی پالیسی

    اردو ورلڈ کینیڈا کے تمام جملہ حقوق محفوظ ہیں۔ ︳    2023 @ urduworld.ca